جنس اور مانع حمل اقدامات

شخصی آزادی ناقابلِ خلاف ورزی ہے ہر کسی کو اپنے جسم پہ اختیار رکھنے کا حق ہے۔ سبھی لوگ منصوبہ بندی کے حقدار ہیں کہ وہ کب بچے پیدا کرنا چاہتے ہیں، یا وہ سرے سے بچہ چاہتے بھی ہیں۔ عورتوں کو حق ہے کہ وہ اپنی خواہش پر اسقاطِ حمل کا اختیار استعمال کریں۔ ڈنمارک میں 1973 سے عورتوں کو آزادانہ اسقاطِ حمل کا حق حاصل ہے۔

آپ خود یہ فیصلہ کرتے ہیں کہ کس کے ساتھ  آپ جنسی تعلق قائم کرنا چاہتے ہیں-  قطع نظر مرد یا عورت ہونے کے۔ آیا شادی سے قبل آپ جنسی اختلاط چاہتے ہیں یہ فیصلہ بھی آپ خود ہی کرتے ہیں۔ آپ خود یہ فیصلہ کرتے ہیں کہ آپ صنف مخالف یا اپنی صنف کے حامل سے جنسی اختلاط کرنا چاہتے ہیں۔

کچھ لوگوں کے لئے پردہ بکارت کا سالم ہونا عورت کے کنوار پنے کی علامت ہے۔ پردہ بکارت ایک جھلی کی پرت ہے جو مختلف عورتوں کے جسم میں جدا گانہ طرح ہوتی ہے۔ کچھ عورتیں بغیر پردہ بکارت پیدا ہوتی ہیں۔  بہت سی عورتوں کا مرد سے ہم بستری پرپہلی بار خون نہیں بہتا ہے۔

جب آپ ہم بستری کریں تو یہ اہم ہے کہ آپ  کو علم ہو کہ آپ اور آپ کے ساتھی کی حفاظت کے لئے کون سی ممکنات ہیں۔ بیماری اور بے طلب حمل ہر دو کے خلاف کیا حفاظتی تدابیرموجود ہیں۔

بہت اقسام کی مانع حمل تدابیرپائی جاتی ہیں۔ مرد کنڈوم استعمال کر سکتے ہیں۔  مثال کے طور پرعورتیں پی گولیاں،  مِنی گولیاں، کنڈلی، پی پٹی، پی انگوٹھی اور پی پلاسٹراستعمال کر سکتی ہیں۔ آپ بلا حفاظت مباشرت کے 72 گھنٹے بعد پچھتانے پر ایک گولی لے سکتی ہیں۔ آپ پہ یہ واضع رہے کہ صرف کنڈوم ہی جنسی بیماریوں کے خلاف حفاظت کرتا ہے۔ آپ مانع حمل، جنسی تعلق اور جنسی بیماریوں کے متعلق  ہمیشہ ڈاکٹر سے بات چیت کر سکتے ہیں۔

آپ مرد یا عورت ہوں شادی شدہ یا غیر شادی شدہ ہوں، آپ خود یہ فیصلہ کرتے ہیں کہ آپ جنسی ملاپ کے لئے ہاں یا نہ کہنا چاہتے ہیں ۔ اگر آپ اپنی مرضی کے خلاف حاملہ ہو گئی ہوں تو بحثیت عورت آپ خود یہ فیصلہ کرتی ہیں آیا آپ  حمل کے بارھویں ہفتے تک اسقاطِ حمل چاہتی ہیں۔  حمل کے بارھویں ہفتے  کے بعد حمل ضائع کروانے کے لئے خصوصی وجوہات ہونی چاہیئں۔

رابطہ

جنس اور معاشرہ ( Sex og samfund)
جنس اور معاشرہ ایک این جی او ہے جو ملکی اور بین الااقوامی سطح پر جنسی صحت کے لئے سرگرم ہے۔ ان کے ہوم پیج پرآپ مثال کے طور پہ مانع حمل، جنسی بیماریوں اور اسقاطِ حمل کے متعلق معلومات لے سکتے ہیں، اور مختلف مشاورت کی پیش کشں جن کی آپ کو ضرورت ہو حاصل کر سکتے ہیں۔
ٹیلی فون: 10 10 93 33
www.sexogsamfund.dk

نوجوانوں کے لئے سیکس لائین
سیکس لینین (sexlinien) پر آپ فون کر کے جنسی صنف، مانع حمل، جذبات، جنسی مباشرت/میلان، عشق و محبت   جنسی حقوق، جسم اور جنسی بیماریوں کے متعلق معلومات اور مشورہ حاصل کر سکتے ہیں۔ سیکس لینین 12 تا 25 سال کے نوجوانون کے لئے ہے۔
ٹیلی فون 66 22 20 70
www.sexlinien.dk

مانع حمل و کلینک برائے مشاورت
مانع حمل و کلینک برائے مشاورت میں آپ سیکس کے بارے میں مشورہ لے سکتے ہیں اور جنسی بیماریوں کا علاج کروا سکتے ہیں۔ آپ صرف فون پہ وقت طے کریں آپ کو ڈاکٹر کی طرف سے حوالہ کی ضرورت نہیں ہے، علاج معالجہ مفت ہوتا ہے۔ اپنا نام بتائے بغیر آپ فون پہ ہمیشہ  سیکس کے بارے میں مشورہ لے سکتے ہیں۔
ٹیلی فون:13 91 13 33
کھلنے کے اوقات: سوم وار، منگل وار اور جمعرات 16 تا 19 بجے
وقت طے کرنا: سوم وار، منگل وار اور جمعرات 15 تا 16 بجے

پتہ: Julius Thomsens Gade 14 B

1632 København V  

دیگر تہذیبی و ثقافتی نوجوان
دیگر تہذیبی و ثقافتی نوجوان آپ کو فیملی میں یا محبوب/محبوبہ سے مسائل درپیش ہونے پر مشورہ دیتے ہیں۔ اگر آپ کو جبری شادی پہ مجبور کیا جا رہا ہو یا آپ خود کو دباؤ میں محسوس کریں، آپ کو زیرِ کنٹرول رکھا جا رہا ہو یا اس سے ملتی جلتی صورتوں میں یہ آپ کو مشورہ دیتے ہیں۔ یہ مشاورت گمنام ہے۔

ٹیلی فون: 66 76 27 70
www.etniskung.dk

صباح (Sabaah)
صباح ڈینش کے علاوہ دیگر تہذیبی و ثقافتی پسِ منظر کے حامل نوجوانوں کی ایک انجمن ہے جو ہم جنسی میلان ، دوجنسی میلان اور مخلوط الجنس والوں کے لئے ہے۔ اگر آپ کو مشکل حالات میں رہنمائی کی ضرورت ہو تو صباح مشاورت کی پیش کش کرتی ہے۔

ٹیلی فون: 00 20 23 33 (مشاورت ہر جمعرات کو 18 تا 20 بجے)

 

حقوق و فرائض

آپ کی ذاتی آزادی ناقابلِ خلاف ورزی ہے آپ کو اپنے جسم پہ اختیار رکھنے کا حق ہے اور اس لئے  آپ کوجنسی مباشرت کے لئے ''ہاں'' اور ''نہ'' کرنے کا حق ہے۔ اس کا اطلاق تب بھی ہوتا ہے جب آپ شادی شدہ ہوں آپ خود یہ فیصلہ کرنے کا حق رکھتے ہیں آیا آپ بچہ پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ہم جنس پرستوں کو سبھی دوسرے لوگوں جیسے حقوق حاصل ہیں۔

سکول میں جنس کے بارے تعلیم لازمی ہے، کیونکہ یہ علم ہونا اہم ہے کہ حاملہ کیسے ہوا جاتا ہے اور خود کو حاملہ ہونے اور اُن بیماریوں سے کیونکر بچایا جا سکتا ہے جو غیر محفوظ جنسی اختلاط سے لاحق ہو سکتی ہیں۔

ڈنمارک میں جنسی رضامندی کی نچلی عمر 15 سال ہے۔ کسی بالغ کا 15سال سے کم عمر سے مباشرت کرنا غیر قانونی ہے۔ اگر 15  سال سے کم عمر کے دو افراد آپس میں ہم بستری کرتے ہیں تو یہ قابلِ سزا نہیں ہے۔

آپ کو اپنے جسم پرخود اختیاری کا حق ہے۔ اس لئے جہاں تک جنسی اختلاط کا تعلق ہے آپ ہاں یا نہ کر سکتے ہیں۔ آپ کی شخصی آزادی ناقابلِ خلاف ورزی ہے۔ 

اگر آپ حاملہ ہو جاتی ہیں اور بچہ نہ پیدا کرنا چاہتی ہوں تو حمل کے 12 ویں ہفتہ کے اندر حمل ساقط کروا سکتی ہیں۔ یعنی آپ ایک ہسپتال میں محفوظ حالات میں اپنے حمل کو منقطع کروا سکتی ہیں۔

اسقاط حمل آپ کا اپنا فیصلہ ہوتا ہے۔ یہ فیصلہ آپ کا شریک حیات، سسرالی خاندان یا والدین نہیں کر سکتے ہیں۔ آپ کے ڈاکٹر پہ صیغہ رازداری کا فرض عائد ہوتا ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ اگر آپ خود اپنے شریک حیات یا خاندان کو اسقاط حمل کے متعلق نہ بتانا چاہیں تو وہ کسی طرح معلوم نہیں کر سکتے ہیں۔

12ویں ہفتہ کے بعد آپ حمل ساقط کروا سکتی ہیں بشرطیکہ صحت یا سماجی نوعیت کی وجوہات موجود ہوں جو اسقاط حمل کی توجہیہ کرتے ہوں، یا آپ کو شبہ ہو کہ جنین کی ساخت میں نقص ہے۔ آپ بارھویں ہفتہ کے بعد اسقاط حمل کا اجازت نامہ اپنے ڈاکٹر کے توسط سے حاصل کر سکتی ہیں۔

اگر آپ کی عمر 18سال سے کم ہو اور آپ اسقاط حمل چاہتی ہوں تو آپ کو والدین میں سے ایک کا اجازت نامہ درکار ہے۔ اگر آپ نہ چاہتی ہوں کہ آپ کے والدین کو اسقاط حمل کا پتہ چلے تو شہریوں کی سروس کے لئے ممکن ہے کہ وہ آپ کو اسقاط حمل کا اجازت نامہ دیدے چاہے آپ کے والدین اس کی مخالفت کرتے ہوں۔

 
 
 

پی ڈی ایف کو سیو کریں لنک بھیجیں